شاعری غزل

تشنگی آنکھوں میں اور دریا خیالوں میں رہے …. احمد فراز

تشنگی آنکھوں میں اور دریا خیالوں میں رہے ہم نوا گر، خوش رہے جیسے بھی حالوں میں رہے دیکھنا اے رہ نوردِ شوق! کوئے یار تک کچھ نہ کچھ رنگِ حنا پاؤں کے چھالوں میں رہے ہم سے کیوں مانگے حسابِ جاں کوئی جب عمر بھر کون ہیں، کیا ہیں، کہاں ہیں؟ ان سوالوں میں […]

شاعری غزل

دو گھڑی ان سے ہم خفا رہے ہیں …. اکرم جازب

دو گھڑی ان سے ہم خفا رہے ہیں اور بڑی دیر غم زدہ رہے ہیں بیری کی ٹہنیاں ہلا رہے ہیں اور تصور میں سیب کھا رہے ہیں مجھ سے ناراض ہیں تو کیوں میرے آپ یہ شعر گنگنا رہے ہیں نارسائی کے دن بھی کیا دن تھے ہم بھی خوش فہم کیا سے کیا […]

مائکروفکشن

Be Mine …. ملیحہ سید

اس سے میری ملاقات اتفاقی تھی ،یا یوں کہہ لیں میں ایک عرصے تک جو میں محبت کی نفی کرتی چلی آئی تھی ، وقت آ گیا تھا کہ مجھے اس کی سزا ملے۔ میں نے اس کے بعد اسے نہیں دیکھا مگر سوچا بہت، میں نے اسے اتنا ہی سوچا جتنا سوچا جا سکتا […]

مضامین

فاخرہ نورین کی / کا “خندہ ہائے زن” …. نیلم ملک

یہ کوئی فخر کی بات نہیں اس لئے شرمندگی سے بتا رہے ہیں کہ ادب سے تعلق ہونے کے باوجود خصوصاً فکاہیہ مضامین کو باقاعدہ کتابی شکل میں پڑهنے کا یہ ہمارا پہلا موقع ہے- طنز اور مزاح سے الگ الگ تو ہمیشہ واسطہ پڑا- کبهی طنز کے تیروں سے زخم زحم ہوئے اور کبهی […]

شاعری نظم

حنوط …… نیل احمد

بے ذائقی کا ذائقہ چکھنے کے لیے میں نے خود سے کنارہ کیا اکیلے پن میں خود سے جدا ہونے کی اذیت تم نہ جان سکو گے خود ساختہ سفر کی کوئی منزل نہیں مگر کچھ دیر سستانے کے لیے جنگل میں خیمہ تو لگانا پڑتا ہے فنا کی چاپوں سے گونجتا ہے دن اور […]

مضامین

عمران شمشاد کی شاعری ….. نیل احمد

بہت دن ہوئے عمران شمشاد کی کتاب "عمران کی شاعری” موصول ہوئی تو کتاب پڑھنے اور یہ جاننے کا موقع ملا کہ کراچی کے ادبی منظر نامے پرایک ایسا نوجوان شاعربھی موجود ہے جو زیست کے شب و روز اپنی شاعری میں اس انداز سے ڈھالتا ہے کہ غزلوں اور نظموں کے الفاظ احساس سے […]

کہانی/افسانہ

یزید …. سعادت حسن منٹو

سن سینتالیس کے ہنگامے آئے اور گزر گئے۔ بالکل اسی طرح جس موسم میں خلافِ معمول چند دن خراب آئیں اور چلے جائیں۔ یہ نہیں کہ کریم داد، مولا کی مرضی سمجھ کر خاموش بیٹھا رہا۔ اس نے اس طوفان کا مردانہ وار مقابلہ کیا تھا۔ مخالف قوتوں کے ساتھ وہ کئی بار بھڑا تھا۔ […]

شاعری غزل

انا زادوں سے نسبت ہے، اذیّت ہے ….. افتخار فلک

انا زادوں سے نسبت ہے، اذیّت ہے یہاں جتنی سہولت ہے اذیّت ہے خردمندی اِسی میں ہے اُٹھا لے جا تجھے میری ضرورت ہے اذیّت ہے ترے پیچھے چلے جانا چلے آنا بڑی کافر طبیعت ہے اذیّت ہے بلا کا بدگُماں ہے وہ، مگر پھر بھی مجھے اُس سے محبّت ہے اذیّت ہے اُٹھا کر […]

شاعری غزل

رُخِ یار حُسن کا باب ہے …. ذوالفقار ذکی

رُخِ یار حُسن کا باب ہے یا کہوں کہ پوری کتاب ہے یہ دیارِ حسن ہے دوستو ! یہاں عشق کارِ ثواب ہے کہیں بولنا بھی ہے رائگاں کہیں خامشی بھی خطاب ہے شبِ وصل رکھتا ہے دوریاں مرا یار کتنا خراب ہے دلِ مضطرب کی میں کیا کہوں یہ نواب ابنِ نواب ہے مری […]